Daily Din News
تازہ ترین خبر
آن لائن اخبار کی ویب سائٹ
پانامہ لیکس،سیف اللہ فیملی کا موقف بھی سامنے آگیا
کرکٹ آسٹریلیا نے نیا کنٹریکٹ حاصل کرنے والی ویمن کرکٹرز پر ڈالرز کی بارش کردی
سعودی عرب سے غیر ملکیوں کیلئے خوشخبری آگئی
پی ٹی آئی کا پھر اعلان حکومت کیلئے نئی پریشانی
عامر خان نے6ماہ میں کچھ ایسا کیا کہ سب حیران رہ گئے
شا ہ سلمان مصر کے تاریخی دورے پر قاہرہ پہنچ گئے
معافی ‘نہیں
امریکا نے خطرناک حکم جاری کر دیا
ہم جنس پرستوں پر عذاب
حملہ آور کی شناخت‘ذمہ دار سامنے نہ آئے
9/11حملوں میں سعودی عرب ملوث نہیں‘امریکا
طور خم کشیدگی برقرار‘میجرعلی جواد شہید
طورخم پر دشمن کے دانت کھٹے
مرضی سے گیٹ لگائیں گے
طور خم بارڈر کھل گیا
لاہور میں بڑا خطرہ
ڈومور کا مطالبہ زیادتی ہے‘ آئی ایس پی آر
مقبوضہ کشمیر‘خودکش حملہ‘8بھارتی فوجی جہنم واصل
13 خود کش بمبار آ گئے
کوئٹہ: ڈبل روڈ پر فائرنگ سے 4 ایف سی اہلکار شہید
کراچی: دو روز کی بارش نے حکومت کی کارکردگی کا پول کھول دیا
یہودی فرقہ اسرائیل کے قیام کا ہی مخالف
ٹیلی وژن سکرینوں پر یہ نمبرز کیوں نمودار ہوتے ہیں؟
پاکستان میں موجود افغان مہاجرین کے قیام میں توسیع
کیا مہنگا ہو گا کیا سستا ہوگا،عوام منتظر

کیا مہنگا ہو گا کیا سستا ہوگا،عوام منتظر

نئے مالی سال کا بجٹ آج پیش کیا جاۓ گا ،،، کیا مہنگا ہو گا کیا سستا ہوگا،عوام منتظر،،،تنخواہوں اور پنشنز میں کتنا اضافہ ہوگا ،سرکاری ملازمین کو بے صبری سے انتظار ۔ آج وزیر خزانہ قومی اسمبلی میں مالی سال 2017ء، 2018ءکا 4ہزار 7سو 78ارب روپے کا بجٹ پیش کریں گے، اگلے سال کے ترقیاتی بجٹ کا حجم ایک ہزار ایک ارب روپے رکھنے کی تجویز دی گئی ہے۔ بجٹ میں قرضوں پر سود کی ادائیگی کیلئے 1401 ارب روپے اور دفاع کیلئے 940 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے۔ بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے کی 2 مختلف تجاویز زیرغور ہیں،پہلی تجویز میں 10فیصد اضافے کے ساتھ ایڈہاک ریلیف ضم کیا جائے گا۔ دوسری تجویز ایڈہاک ریلیف تنخواہ میں ضم کرنے کے بعد موجودہ تنخواہ میں10فیصد اضافہ زیر غور ہے۔اایف بی آر کی ٹیکس وصولیوں میں 15فیصد اضافے کا ہدف مقرر کرنے کی تجویز ہے جو تقریباً 3900 ارب روپے بنتا ہے، اس سلسلے میں حتمی فیصلہ ابھی ہونا باقی ہے۔ بجلی، زراعت اور دیگرشعبوں کے لیے سبسڈی اور گرانٹ کیلئے 230 ارب روپے مختص کرنے کی بھی تجویز ہے جبکہ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے لیے 123 ارب روپے مختص کئے جانے کی تجویز ہے۔ بے گھر افراد کی بحالی اور سیکیورٹی انتظامات کے لیے 90 ارب روپے مختص کئے جائیں گے، آئندہ مالی سال کے بجٹ میں شرح نمو اور افراط زر کا ہدف 6 فیصد تجویز کیا جا رہا ہے جبکہ مالی خسارہ 4عشاریہ ایک فیصد اور کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ جی ڈی پی کا 2اعشاریہ 6فیصد تجویز کیا جا رہا ہے۔


متعلقہ خبریں